ڈائو یونیورسٹی کے پروفیسر کے مطابق پاکستان میں 26 اپریل سے 10 مئی تک کورونا وائرس کی ہلاکتوں میں اضافہ ہوسکتا ہے

Pakistan
Coronavirus outbreak may worsen after April 26 in Pakistan

ڈائو یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے  سابقہ وائس چانسلر کا خیال ہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس سے ہونے والی اموات کچھ دنوں کے اندر یعنی 26 اپریل سے 10 مئی تک عروج پر جاسکتی ہیں اور مزید مشکل وقت کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

ان کے مطابق وائرس نے دنیا بھر میں اپنے اثرات ظاہر کرنے میں 50 سے 60 دن کا وقت لیا ہے اور انہوں نے مزید کہا ہے کہ آمریکہ اور یورپ میں وائرس کے ابھرنے کے 50 سے 60 دنوں کے بعد ہی ہلاکتوں میں مزید اضافہ دیکھا گیا ہے۔

ایک ویڈیو پیغام میں پروفیسر مسعود نے کہا ہے کہ پاکستان میں 26 فروری کو پہلے کورونا وائرس کے کیس کی تصدیق کی گئی تھی اور اب تقریبا 57 دن گذر چکے ہیں۔ انھوں نے مزید پیش گوئی کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگلے دس سے پندرہ دن میں ملک میں کووڈ 19 سے ہونے والی ہلاکتوں میں اچانک اضافہ ہوسکتا ہے۔

انہوں نے حکومت کو متنبہ کیا ہے کہ کوڈ ۔19 کی وجہ سے ہونے والی تباہی سنگین صورتحال پیداکرسکتی ہے، جس سے ہلاکتوں کے تعداد میں بہت تیزی سے اضافہ ہوسکتا ہے لہذا حکومت پاکستان کو لاک ڈاؤن کو سختی سے نافذ کرنا چاہئے۔

خان نے عوام کو بھی مشورہ دیا ہے کہ ہر فرد کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس وائرس کو مزید پھیلنے سے روکنے میں معاشرتی دوری اختیار کرے اور حکومت کی طرف سے دی گئی ہدایات پر عمل کرنے کےلئے حکومت کی مدد کرے۔