کیا بھارت کے چندریان 2 مشن کو شمالی کوریا نے ہیک کیا ہے؟

Space
Chandrayaan 2 mission hacked by North Korea hackers

برطانیا کے خبر رسان ادارے ڈیلی میل میں شایع ہونے والے ایک رپورٹ کے مطابق خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ ھندستانی خلائی ایجنسی اسرو پر شمالی کوریائی ہیکرز نے اس وقت حملہ کیا جب ان کے چندریان 2 مشن کا خلائی جہاز چاند پر اترنے کی کوشش کررہا تھا۔

سائبر سیکورٹی ماھرین کے مطابق بھارتی خلائی ایجنسی اسرو زیربحث آنے والی پانچ سرکاری ایجنسیوں میں سے ایک ہے جس کو ھیکرز اٹیک کرسکتے تھے۔ ایجنسی سے وابستہ لوگوں کو خدشہ ہے کہ انہوں نے شمالی کوریا سے فشنگ ای میلز کھول رکھی ہونگی جو غلطی سے اپنے سسٹم پر میلویئر انسٹال کرتی ہیں۔

فنانشل ٹائمز کے مطابق ستمبر میں چندریان 2 کے چاند مشن کے دوران اسرو کو سائبر حملے سے خبردار کیا گیا تھا۔ جب کہ انڈین اسپیس ایجنسی نے اس طرح کی ہیکنگ ماننے سے انکار کردیا ہے۔

یاد رہے کہ انڈیا اس وقت خلائی دوڑ میں آگے جانے کی کوشش میں لگا ہوا ہے اس نے مارچ میں ایک مصنوئی سیارہ خلا میں گرایا تھا جس وجہ سے آمریکا، روس اور چین کے بعد یہ چھوتھا ملک بن گیا ہے جس کو خلا میں سیٹلائیٹ گرانے کا اعزاز حاصل ہے۔ تاہم انڈیا کے خلائی پروگرام کو اس وقت دھچکا لگا جب کچھ ماہ پہلے بنگلور میں واقع کنٹرول اسٹیشن سے چندریان 2 خلائی جہاز سے رابطہ ختم ہوگیا اور پھر اس مشن سے بار بار رابطہ کرنے کی کوشش کے باوجود بھی رابطہ نہیں ہوسکا۔

جب کہ چاند کے ناکام مشن کے بعد سائبر سیکیورٹی ماھرین کی طرف سے اسرو کو اس طرح کے حملوں کی لہر سے خبردار کردیا گیا تھا اور شمالی کوریا کے اسپیمر سے ممکنہ خطرے کے بارے میں بھی آگاہ کیا گیا تھا۔

یاد رہے کہ ہیکرز 2018 سے ہندستان کی ایٹمی ایجنسیوں کو نشانہ بنارہے ہیں، پچھلے ھفتے ہی ہندستانی توانائی شعبے کے بورڈ کے چیئرمین نے کندنکلم نیوکلیئر بجلی گھر پر سائبر حملے کا بھی اعتراف کیا ہے۔