روس نے قومی انٹرنیٹ کا تجربہ کامیابی کے ساتھ مکمل کرلیا

Technology
Russia completes successful test of national internet

روس نے گلوبل انٹرنیٹ کا متبادل قومی انٹرنیٹ کا کامیابی کے ساتھ تجربہ کرلیا ہے جس کو رنیٹ(Runet) کا نام دے دیا گیا ہے۔

اس ٹیسٹ میں شامل تفصیلات ابھی تک مبھم ہیں لیکن روسی وزارت مواصلات کے مطابق عام صارفین کو کسی بھی قسم کی تبدیلی محسوس نہیں ہوگی۔ اس کے نتائج جلد صدر پوتن کے سامنے پیش کئے جائیں گے۔

عالمی ماھرین کچھ ممالک کے انٹرنیٹ کو ختم کرنے کے رجحان پر تشویش کا شکار ہیں۔
اس سے پہلے چائنا اور ایران نے بھی اپنے ممالک کے شہریوں کو کنٹرول کرنے کےلئے بہت ہی گھری نظر رکھی ہوئی ہے۔
اس کا مطلب ہے کہ لوگوں کو ان کے اپنے ملک میں کیا ہورہا ہے اس کے بارے میں بھی اہم خبروں تک رسائی حاصل نہیں ہوگی اور انہیں اپنے بلبلے میں رکھا جائے گا۔
حکومت کے زیر کنٹرول اس انٹرنیٹ کو مزید موثر بنایا گیا ہے تاکہ ورچیول پرائیوٹ نیٹورک (وی پی این ) مکمل طور پر بند ہوجائیں جو اکثر آئی ایس پیز بلاکس کو روکنے کےلئے استعمال کئے جاتے ہیں۔

رنیٹ کیسے کام کرے گا؟

اس انٹرنیٹ میں روس میں چند ایسے مخصوص پوانٹس بنائے جائیں گے جہاں پر گلوبل انٹرنیٹ کے ساتھ کنکیشن ملایا جائے گا جہاں سے حکومتی ادارے پورے ملک کے انٹرنیٹ سروس کی نگرانی کرپائیں گے۔

اس انٹرنیٹ سروس میں آئی ایس پیز (انٹرنیٹ سروس فراہم کرنے والے) اور ٹیلیکوس کی مدد سے بہت بڑے انٹرانیٹ سروس کو تشکیل دیا جائے گا اور پھر عام صارف ان آئی ایس پیز کے تشکیل شدہ انٹرنیٹ کو استعمال کرسکیں گے، جس طرح بڑی بڑی کارپوریشنز کرتی ہیں۔
پروفیسر ووڈورڈ کے مطابق چائنا کی طرح روس بھی گوگل اور فیس بک کے متبادل اپنے ملک میں بنانا چاہتی ہے۔
اس کے علاوہ روس اپنا وکی پیڈیا بنانے کے اوپر بھی کام کررہا ہے اور سیاستدانوں نے ایک بل بھی اسیمبلی سے منظور کروا لیا ہے جس میں ایسے سمارٹ فونز کی فروخت پر پابندی عائد ہوگی جس میں روسی سافٹویئر پہلے سے انسٹال نہیں ہونگے۔

Source: bbc.com