شمسی توانائی پہ چلنے والا سسٹم جو سمندر کے کڑوے پانی کو پینے کے لائق بنائے گا

Technology
Solar-powered water desalination

چین اور ایم آئی ٹی کے محققین کی ٹیم نے شمسی توانائی پہ چلنے والا ایک ایسا سسٹم تیار کیا ہےجو سمندر کے کڑوے پانی کو پینے کے لائق بنائے گا۔ یہ سسٹم ہر مربع میٹر سے فی گھنٹہ 1.5 گیلن تازہ پینے کا پانی مہیا کرسکتا ہے۔ ایسے سسٹم ممکنہ طور پرآف گرڈ، بنجر ساحلی علائقوں پہ کم لاگت سے صاف پانی مہیا کرسکتے ہیں۔

یہ آلہ بنیادی طور پر ایک ملٹی لیئر شمسی توانائی کا سسٹم ہے، جس میں بخارات کو ٹھنڈہ کرنے والے آلات بھی ہیں ۔ یہ سسٹم سورج کی گرمی کو جذب کرنے اور پھر اس حرارت کو پانی کی ایک پرت میں منتقل کرنے کےلئےفلیٹ پینلز کا استعمال کرتا ہے تاکہ بخارات بننے کا عمل صحیح طریقے سے ہوسکے، اور پھر دوسرے حصے میں ان بخارات کو ٹھنڈا کیا جاتا ہے اور تیسرے حصے سے پانی کو حاصل کیا جاتا ہے۔

عام طور پر جب بھی بخارات گاڑہا ہوجاتے ہیں تو وہ حرارت کو باہر ماحول میں چھوڑ دیتے ہیں اور حرارت آسانی سے ماحول میں ختم ہوجاتی ہے لیکن اس ملٹی لیئر سسٹم میں اس حرارت کو دوسرے لیئر میں چھوڑ دیا جاتا ہے اور اس طرح شمسی توانائی کی ری سائیکلنگ کی وجہ سے اس سسٹم کی مجموئی کارکردگی بڑہ جاتی ہے۔

بنانے والی ٹیم کے مطابق اس طرح کے سولر پاورڈ ڈیسیلینیشن سسٹم کو سمندر یا تالابوں  کے اوپر تیرتے پینلس کی طرح لگایا جا سکتا ہے اور پھر صاف ہونے والے پانی  کو پائپوں کے ذریعے دوسری جگہ جمع کیا جا سکتا ہے۔  اس طرح اس نول طریقے سے حاصل ہونے والا پانی انسانی ضروریات کو پورا کرسکتا ہے۔

ماہرین نے امید ظاہر کی ہے کہ ترقی پذیر دنیا کے ایسے علائقے جہاں پر پانی کی قلت پائی جاتی ہے وہاں پر یہ سسٹم بہت مددگار ثابت ہو سکتا ہے جہاں پر قابل اعتماد بجلی کی بھی قلت ہے لیکن سمندری پانی اور سورج کی روشنی وافر مقدار میں موجود ہے۔