گوگل اور یوٹیوب کتنے پئسے کماتے ہیں؟

Earn Money
Alphabet revenue form Google and Youtube

الفابیٹ نے پہلی بار گوگل کے اندر مختلف بزنس یونٹوں کی اصل سائز کو ظاہر کیا ہے، بشمول یوٹیوب کی ایڈورٹائزنگ، جس نے 2019 میں 15 بلین ڈالر کمائے۔

یوٹیوب کے اشتہارات کی فروخت میں 2018 میں 36 فیصد اور 2017 میں 86 فیصد تک بڑہاوا آیا تھا۔

کمپنی کے اوپری لیول پر آمدن کے دو ہی ذرائع ہیں ، گوگل ایڈورٹائزنگ اور دوسرے گوگل کے آمدنی کے ذرائع جو یوٹیوب، کلائوڈ اور سرچ پہ مشتمل ہیں۔

سال کے آخری تین مہینوں  کی آمدن 46 بلین ڈالر رکارڈ کی گئی ہے جو وال اسٹریٹ کے تجزیہ کاروں کے مطابق 46.9 بلین ڈالر متوقع تھی اس وجہ سے کمپنی کا اسٹاک پانچ فیصد گرگیا ہے۔

الفابیٹ کے مطابق ان کا ایک شیئر $15.35 کا ہوگا جب کہ وال اسٹریٹ کے تجزیہ کاروں نے $12.53 کا ایک شیئر ہونے کا اندازہ لگایا ہے۔

ALPHABET’S FULL-YEAR 2019 EARNINGS BY SEGMENT

Google Search & Other – $98 billion

YouTube Ads – $15 billion 

Google Cloud – $9 billion

Google Other – $17 billion

Other bets – $659 million

Hedging Gains – $455 million

اوپر دیئے گئے رپورٹ کے مطابق گوگل کی 60 فیصد آمدن “گوگل سرچ اور دیگر”  والے ذرائع سے آتی ہے اس کے بعد یوٹیوب ایڈ سے 15 بلین ڈالر کمائے، گوگل کلائوڈ سے 9 بلین ڈالر کمائے اور اس کے علاوہ دوسرے ذرائع سے آنی والی آمدن کو بھی دیکھا جا سکتا ہے۔

الفابیٹ کی آمدن میں مجموئی طور پر اضافہ سست ہوتا دکھائی دے رہا ہے۔ سال کے آخری تین ماہ میں میں 17 فیصد کا اضافہ دیکھا گیا ہے جب کہ اس کے پہلے تینوں کوارٹرز میں 19، 20 اور 20 سے بھی زیادہ دیکھا گیا تھا۔

گوگل کے بنیادی ایڈروٹائزنگ کے بزنس کو حالیہ برسوں میں بہت تیزی سے بڑہتے ہوئے دیکھا گیا ہے۔

یوٹیوب سے 15 بلین ڈالر کا آمدن آیا:

 پوری سال کے دوران یوٹیوب کے اشتہارات کے کاروبار میں برانڈ ایڈورٹائزنگ سب سے زیادہ پایا گیا ہے۔ جس میں کلک-ٹو-بئی اشتہارات کو پراڈکٹ رویو وڈیوز پہ زیادہ دیکھا گیا ہے۔

ای-ماریکٹر کے تجزیہ کار نکول پیرن کے مطابق سب سے اہم خبر یہ ہے کہ گوگل سب سے پہلی بار یوٹیوب کے اشتہار کی آمدنی کو دنیا کے سامنے دکھا رہا ہے۔ یہ وہ چیز ہے جس کے لئے سرمایہ کار کافی وقت سے انتظارکر رہے تھے۔

ڈجیٹل ایڈ کے میدان میں یہ معلومات مشتہرین کو یوٹیوب کی اہمیت کے باری میں قیمتی معلومات بھی دیتی ہے۔ اس رپورٹ کے مطابق یوٹیوب بہت تیزی سے ترقی کررہا ہے اوراس کے استعمال سے کاروبار بہت تیزی سے بڑہ رہے ہیں۔

گوگل کے سی ای او سندر پچائی کے مطابق یوٹیوب نے دسمبر تک سال کے آخری تین ماہ میں نان ایڈ منافع جیسے سبسکرپشن میں بھی 3 بلین ڈالر کمائے ہیں، انہوں نے مزید کہا ہے کہ اب اس پلیٹ فارم پہ 20 ملین سے زیادہ یوٹیوب میوزک اور پریمیم پیڈ صارفین ہیں۔

کلائوڈ سے آنی والی آمدن:

ایک اور بزنس سیگمینٹ جو بہت تیزی سے بڑہ رہا ہے وہ گوگل کلائوڈ ہے۔ کلائوڈ مارکیٹ میں گوگل امیزون ویب سروسز اور مائکروسوفٹ ایذور سے آگے پیچھے تیسرے مقام کا مقابلہ کرنے والا سمجھا جاتا ہے جو ان دونوں کمپنیوں کو پیچھے چھوڑنے کی کوشش میں لگا ہوا ہے۔

گوگل کلائوڈ نے پوری سال 2019 میں 9 بلین ڈالر کمائے جو امیزون کے (AWS) ای ڈبلیو ایس کے آخری کوارٹر کے آمدن سے بھی کم تھی۔

دسمبر میں ختم ہونے والے تین ماہی اختتام میں 2.6 بلین ڈالر کی آمدن کو رکارڈ کیا گیا ہے جو گزشتہ سال کی اسی مدت میں سے 52 فیصد زیادہ ہے۔ جب کہ AWS کی تین ماہی آمدن میں 34 فیصد اضافہ دیکھا گیا ہےاور Azure کی آمدن میں 62 فیصد اضافہ دیکھا گیا ہے۔

سائنوس ٹرسٹ کمپنی کے تجزیہ کار ڈین مورگن نے پیر کو ایک سرمایہ کار نوٹ میں کہا ہے کہ نتائج سے ظاہر ہوتا ہے کہ گوگل کلائوڈ AWS اورAzure سے مارکیٹ شیئر حاصل کررہا ہے اور جلد ہی ان کے برابر پہنچ جائے گا۔

Source: cnn.com