کیلیفورنیا کی ایک کمپنی ہوا میں پائے جانے والے عناصر سے گوشت تیار کررہی ہے۔

Health
Air protein in form of meat

خلائی پروازوں کے ابتدائی ایام کے دوران ناسا کے سائنسدانوں کو خلابازوں کی خارج کردہ کاربان ڈائی آکسائیڈ سے کھانا تیار کرنے کا خیال آیا تھا یعنی خلائی جہاز کے اندر سفر کرنے والے خلاباز لمبے سفر کے دوران اپنے جہاز کے اندر کی ہوا کو خوراک کے طور پر استعمال کر سکیں اگرچہ یہ تصور حقیقت نہیں بن سکا۔

لیکن اب کیلیفورنیا میں قائم ایک فرم جانوروں سے پاک گوشت تیار کرنے کےلئے اسی اصول کا استعمال کررہا ہے۔ انہیں امید ہے کہ جلد ہی یہاں زمین پر لوگوں کوجانوروں کے بغیر گوشت تیار ہوکے ملے گا۔

چونکہ دنیا کی آبادی میں اضافہ ہوتا جارہا ہے ہر ایک کےلئے صحتمند کھانا ایک چیلیج بنتا جا رہا ہے خاص طور پر گوشت خورآبادی کےلئے۔ گوشت کا بڑہتا ہوا استعمال پہلے سے موجودہ وسائل پر بہت زیادہ دباؤ ڈال رہا ہے جب کہ ماحول پر بھی نقصاندہ اثر ہو رہا ہے۔

اس مسئلے کو حل کرنے کےلئے ایک ایئر پروٹین(Air Protein) کا نمونا تیار کیا گیا ہے.  جس کو حاصل کرنے کےلئے جراثیم (Microbes) ہوا میں موجودہ کاربان ڈائی آکسائیڈ کو ایک پروٹین مادے میں تبدیل کرتا ہے جس میں وہی امائنوایسڈ پروفائیل ہوتا ہے جو جانوروں کے گوشت سے حاصل کیا جاتا ہے۔

ان جرثوموں کو ہائڈروجنٹروفس کہا جاتا ہے جس کی پرورش دونھی کے ٹینکوں میں کی جاتی ہے .جہاں انہیں کاربا ڈائی آکسائیڈ ، پانی اور دیگر غذائی اجزاء دیئے جاتے ہیں۔ اس مرکب کا استعمال کرتے ہوئے وہ ایک بھوری رنگ کا آٹا تیار کرتے ہیں جس میں 80 فیصد پروٹین ہوتا ہے۔

اگرچہ اس مادہ کو گوشت کہنا پوری طرح سے درست نہیں ہے لیکن بنانے والی کمپنی ایئر پروٹین کے مطابق گوشت کے متبادل پیدا کرنے کےلئے اس کو دوسرے اجزاء کے ساتھ ملایا جاسکتا ہے۔
اوپرے حصے یعنی جرثوموں اور ہوا سے گوشت بنانے کے لئے اس ایئر پروٹین کو جانوروں اور پودوں کی طرح مہینوں کے بجائی گہنٹوں میں تیار کیا جا سکتا ہے۔