نیند کی کمی الزایمر کا سبب بن سکتی ہے

Health

نیند سے محروم دماغ میں دو قسم کے پروٹین کی زیادہ مقدار بڑہتی رہتی  ہے ماھرین کا کہنا ہے کہ جس کے تعداد کے بڑہ جانے سے الزایمر(Alzheimer) نامی دماغی بیماری کا خطرہ بڑہ جاتا ہے ۔ اس نئی تحقیق میں نیند کے کم کرنے کی وجہ سے زیادہ مقدار میں پائے جانے والے پروٹین کو تاو(tau) کا نام دے دیا گیا ہے یہ ایک خاص قسم کا فلیوڈ ہوتا ہے جوانتہائی نیند سے محروم بالغوں کے  دماغ اور ریڑہ کی ہڈی میں پھلتا رہتا ہے،  (tau)تاو پروٹین جو اعتصابی سیلس  (nerve cells)کی تباہی سے منسلک ہے جو دماغ میں وقتناؑ بہ وقتناؑ پھیلتا رہتا ہے۔

اس رسرچ میں کچھ لوگوں کو36 گھنٹوں کے لیے پہلے معمول کی نیند میں مانیٹر کیا گیا اور پھر 36 گھنٹوں کی نیند سے محروم کیا گیا، اور پھر ان لوگوں کے Cerebrospinal fluid کے نمونے حاصل کیے گئے  اور پتا چلا کہ52 فیصد (tau) تاو پروٹین ان لوگوں کے اندر ہی پایا گیا جن لوگوں نے نیند نہیں کی تھی، محققین نے تجویز پیش کی ہے کہ نیند کا معیار بھی (tau) تاو پروٹین کے لیول کے بڑہاوے میں کلیدی کردار ادا کرسکتا ہے۔

محققین کا کہنا ہے کہ نیند کے کم ہونے کی وجہ سے تاو پروٹین کے ساتھ A-beta پروٹین کی تعداد بھی بڑہ جاتی ہےیہ دونوں پروٹین نیند کی کمی کی وجہ سے دماغ کی سطح میں جمع ھوتے رہتے ہیں ۔ شواہد سے پتا چلتا ہے کہ جب دماغ کے عصابی خلیات(Brain nerve cells) انتہائی سرگرم ہوتے ہیں تو یہ بہت تیزی سے دوسری نیورانس کو پیغام بھیجتے رہتے ہیں اور اس وقت یہ خلیات بہت زیادہ  (tau)تاو پروٹین کا اخراج کرتے رہتے ہیں،ان پروٹین کی  ضرورت سے زیادہ مقدار دماغ کے خلیات کو نقصان پھنچاتی ہے۔  ایک اندازے کے مطابق آمریکا میں 5.7 ملین لوگ الزیمر بیماری میں مبتلا ہیں۔